یہ جو میری آنکھ میں اکثر نم رہتا ہے




یہ جو میری آنکھ میں اکثر نم رہتا ہے
پیش نظر ہمیشہ ایک ہی غم رہتا ہے
بعد تمہارے سنبھل تو جاتی ہے پر کچھ دن
دوست طبیعت میں جو زیر و بم رہتا ہے
عشق اذیت ناک بھی ہے اور صبر طلب بھی
لیکن اس سے آدمی تازہ دم رہتا ہے
اس درجہ مصروف ہوں کار دنیا میں
اب تو اپنا دھیان بھی ارشد کم رہتا ہے
ارشد شاہین




اپنا تبصرہ بھیجیں