دو شعر




اداسی آسماں ہے دل مرا کتنا اکیلا ہے
پرندہ شام کے پل پر بہت خاموش بیٹھا ہے
مکاں سے کیا مجھے لینا ، مکاں تم کو مبارک ہو
مگر یہ گھاس والا ریشمی قالین میرا ہے
بشیر بدر




اپنا تبصرہ بھیجیں