جو بھی کہنا ہے برا ملا کہیے




جو بھی کہنا ہے برا ملا کہیے
نا روا ہے تو نا روا کہیے
تیری آمد ہے باعث توقیر
بے تکلف ہی مدعا کہیے
مصلحت ہے منافقت بربط
جو برا ہے اسے برا کہیے
بربط تو نسوی ؔ




اپنا تبصرہ بھیجیں