اس شہر میں حد رم و رفتار کہا ں تھی




اس شہر میں حد رم و رفتار کہا ں تھی
زندان ستم کی کوئی دیوار کہاں تھی
کیا جانئے کس لمس نے کونگوں کو زباں دی
کل تک ترے سکوں میں یہ جھنکار کہاں تھی
یہ بات کسی طور نہ آپائی پلک تک
اے اشک مری دولت اظہار کہاں تھی
کیا دن تھے کہ گلیاں سمٹ آئی تھیں گھروں میں
یہ دھوپ سر کوچہ و بازار کہاں تھی
خالد احمد




اپنا تبصرہ بھیجیں