رکے ہوئے ہیں کہ ہم حالت سفر میں ہیں




رکے ہوئے ہیں کہ ہم حالت سفر میں ہیں
جہاں بھی ہیں، غم ہستی کی رہگزر میں ہیں
پڑی ہے خاک ملائم صبیح چہروں پر
بلندیوں کے نشاں دفن کنج در میں ہیں
خالد شریف




اپنا تبصرہ بھیجیں