جنون عشق کی رسم عجیب کیا کہنا




جنون عشق کی رسم عجیب کیا کہنا
مین ان سے دور وہ میرے قریب کیا کہنا
یہ تیرگی ، مسلسل مین ایک وقفہ نور
یہ زندگی کا طلسم عجیب کیا کہنا
جو تم ہو برق نشمن تو میں نشمین برق
الجھ پڑے ہین ہمارے نصیب کیا کہنا
لرز گئی تری لو میرے ڈگمگانے سے
چراغ گوشہ کوئے حبیب ! کیا کہنا
مجید امجد




اپنا تبصرہ بھیجیں