وہ کون سمن بر ہے کہ مہمان جناں ہے




وہ کون سمن بر ہے کہ مہمان جناں ہے
وہ کون ہے جو شمشاد پہ مرنے کو رواں ہے
وہ غنچہ دہن کون ہے جو تشنہ دہاں ہے
وہ کون گل تر ہے کہ پانال کزاں ہے
وہ کون شجر ہے کہ تبر جس پہ چلیں گے
وہ کون ہے سب جس کے لیے ہاتھ ملیں گے
میر انیس




اپنا تبصرہ بھیجیں