ہمزاد سے مکالمہ




ہمزاد سے مکالمہ
کتنے گہرے دکھ ہیں تیرے
کتنی گہری بات
کتنا مدھم دن ہے تیرا
کتنی کالی رات
کتنا تجھ میں سوز بھرا ہے
کتنا تجھ میں ساز
ظلم کا شیشہ توڑ سکے گی
کیا تیری آواز ؟
اے میرے دمساز
اعجاز رضوی ؔ




اپنا تبصرہ بھیجیں