چاند کو چھونے کا قصہ، پھول پی جانے کی بات




چاند کو چھونے کا قصہ، پھول پی جانے کی بات
ہر سہانی آرزو اب تک ہے دیوانے کی بات
شمع کے جلوے پہ سب کی جان جاتی ہے سرور
کون سمجھے ایک پروانے کے جل جانے کی بات
آل احمد سرور ؔ




اپنا تبصرہ بھیجیں